سابق صدر اور وزیراعطم کیسز بھگت رہے ہیں تو سب کو حساب دینا پڑے گا

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ اگر سابق صدر اور وزیراعظم حساب دے رہے ہیں تو پھر سب کو حساب دینا پڑے گا۔

میرپور خاص میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کورونا وبا کے بعد ہم اب تک معاشی مسائل سے نہیں نکلے، اور شدید بارشوں کے بعد ٹڈی دل کے حملوں سے زراعت کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ سیلاب اور بارش سے بہت نقصان ہوا ہے، پورا میرپور خاص سیلابی پانی میں ڈوبا ہوا ہے، سیلاب متاثرین کا ساتھ ہوگا اور پورے پاکستان کو ایک ہونا پڑے گا۔

انہوں نے کہا کہ تاریخی بارش سے ہونے والے نقصان کے لیے غیر معمولی مدد کرنا ہوگی، کیونکہ زراعت کو نقصان ہوتا ہے تو پورے پاکستان کو نقصان ہوتا ہے۔

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ پی ٹی آئی کے منشور میں زراعت شامل ہے لیکن آج تک زراعت ایمرجنسی نافذ نہیں کی گئی، غریب کسانوں کو ریلیف دینا پڑے گا، چھوٹے کسانوں کو ہنگامی بنیادوں پر مدد کی ضرورت ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت 5 گھنٹوں کا ٹرپ لگا کر واپس نہ جائے، وزیراعظم عمران خان خود کو کپتان کہتے ہیں تو جس طرح وزیراعلیٰ سندھ اپنی ٹیم کے ساتھ سیلاب متاثرین کے ساتھ کھڑے ہیں اسی طرح وزیراعظم کو بھی سیلاب متاثرین کا ساتھ دینا چاہیے۔

توشہ خانہ ریفرنس سے متعلق پوچھے گئے سوال پر بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ سابق صدر پر بتائے گئے تمام کیسز سیاسی اور مضحکہ خیز ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو