درجنوں فلسطینی صحافیوں کے وٹس ایپ اکاؤنٹ بلاک

غزہ کی پٹی پر اسرائیل کی جانب سے جاری جارحیت کی کوریج کے بعد دنیا کی سب سے مقبول میسجنگ ایپ واٹس ایپ نے درجنوں فلسطینی صحافیوں کے اکاؤنٹس بلاک کر دئیے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق مغربی مقبوضہ بیت المقدس اور غزہ سے تعلق رکھنے والے الجزیرہ اور اے ایف پی ایجنسی کے صحافیوں کا کہنا ہے کہ انہیں واٹس ایپ کی جانب سے پیغامات موصول ہوئے ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ ان کے اکاؤنٹس کو معاشرتی معیار کی خلاف ورزی پر بلاک کردیا گیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فلسطینی صحافی نے بتایاکہ تقریباً 100 فلسطینی صحافیوں کے واٹس ایپ اکاؤنٹ بلاک کر دیئے گئے ہیں۔

غزہ کی پٹی پر تعینات الجزیرہ کے بیوروچیف کا کہنا تھا کہ ان کا واٹس ایپ اکاؤنٹ اسرائیل اور حماس کے درمیان جنگ بندی کے اعلان کے بعد 3 روز کے لیے بلاک کردیا گیا تھا، تاہم اتوار کے روز سیلیکون ویلی میں مقیم واٹس ایپ کے ہیڈکوارٹرز میں شکایت درج کیے جانے کے بعد ان کا اکاؤنٹ بحال کردیا گیا۔

ان کے مطابق بحال کیے جانے کے بعد واٹس ایپ ایپلی کیشن سے ان کے تمام پیغامات اور ڈیٹا(بشمول نمبرز) کو بھی ڈیلیٹ کردیا گیا۔

دوسری جانب اے ایف کی رپورٹ کے مطابق 11 روز سے جاری اسرائیل اور غزہ کے لڑائی جھگڑے کے بعد ان کے 2 صحافیوں کے اکاؤنٹس کو بھی واٹس ایپ کی جانب سے بلاک کیا جاچکا ہے۔

ادھر عرب میڈیا کے ’سینٹر آف ڈویلپمنٹ آف سوشل میڈیا‘ کا کہنا ہے کہ واٹس ایپ اکاؤنٹ کو بلاک کرنا کوئی انوکھا واقعہ نہیں تھا، رواں ماہ ( 6 سے 19 مئی کے دوران) فلسطینوں کے ڈیجیٹل حقوق کی500 سے زائد بار خلاف ورزیوں کے واقعات سامنے آئے ہیں جس کے باعث فلسطینیوں کے اکاؤنٹس کو بلاک کرنا، انٹرنیٹ پر موجود مواد اور ہیش ٹیگز کو حذف کرنا یا چھپانا، پرانے مواد کو ڈیلیٹ کرنا اور انٹرنیٹ ایکٹیویٹی کم یا معطل کرنا شامل ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو