ایک ہاتھ سے محروم مسلمان خاتون نے 1200 فٹ بلند دیوار عبور کرلی

انوشے حسین نے ایک بازو کے باوجود 12229 فٹ دیوار پر چڑھ کر نیا عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے۔ فوٹو: گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ

انوشے حسین نے ایک بازو کے باوجود 12229 فٹ دیوار پر چڑھ کر نیا عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے۔ فوٹو: گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ

 لندن: برطانوی مسلمان خاتون انوشے حسین نے ایک ہاتھ سے عمودی دیوار پر چڑھ کر ایک نیا عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے۔ اس کا اعتراف گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ نے بھی کیا ہے۔

انوشے ایک مرتبہ کینسر سے صحیتاب ہوچکی ہیں جبکہ دوسری جانب وہ پیدائشی طور پرکہنی سے نیچے ایک ہاتھ سے محروم ہیں۔ وہ دیوار کو ایک شخصیت قرار دیتی ہے جو انہیں کامیابیاں دلاتی ہیں۔

اس سال پانچ اپریل کو انوشے نے ایک ہاتھ سے ایک گھنٹے میں سب سے زیادہ عمودی فاصلہ طے کیا تھا جو 374.85  میٹر یا 1229 فٹ نوانچ ہے۔ یہ کامیابی انہوں نے دی کاسل کلائمبنگ سینٹر، لندن میں میں حاصل کی ہے۔  تاہم اس کی تصدیق ادارے نے ابھی کی ہے۔

انوشے کےلئے سب سے بڑا چیلنج یہ تھا کہ ان کا چھوٹا اور نامکمل بازو ہی غالب عضو ہے اور انہوں نے الٹے ہاتھ سے اپنے جسم کو اوپر کھینچا جو زائد وزن ہونے کی وجہ سے بہت مشکل بھی تھا۔ اس دوران انہیں توازن رکھنے میں بھی بہت مشکل ہوئی تھی۔

تاہم دیوار اتنی بڑی نہ تھی تو انہیں ریکارڈ کے لیے انہیں بار بار اوپر چڑھنا پڑا اور مجموعی طور پر کئی مرتبہ چڑھ کر انہوں نے مطلوبہ ریکارڈ کا فاصلہ طے کیا۔ یہ کھیل پیراکلائمبنگ کہلاتا ہے جو دنیا بھر میں تیزی سے مقبول ہورہا ہے۔

انوشے نے اعزاز حاصل کرنے کے بعد کہا کہ وہ گزشتہ سال بیمار رہی تھیں اور اب ایک عالمی اعزاز حاصل کرنا ان کی خوش نصیبی ہے۔ پیشے کے لحاظ سے انوشے ایک پالیسی مشیر اور ایتھلیٹ ہیں، لیکن سب سے بڑھ کو وہ دنیا بھر کے لئے عمل کی ایک تحریک بھی ہیں۔

کم عمری میں انہیں مارشل آرٹس سے دلچسپی پیدا ہوگئی تھی اور انہوں نے اس کھیل میں بھی اپنے جوہر دکھائے تھے۔ واضح رہے کہ وہ ایک اور نایاب مرض ایہلر ڈینلوس سنڈروم کی شکار ہیں جس میں پٹھے کمزور ہوجاتے ہیں اور بسااوقات ہڈیاں ازخود ٹوٹ جاتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ انہیں دیوار پر چڑھتے ہوئے بھی شدید تکلیف کی شکار رہیں لیکن انہوں ںے ہمت نہیں ہاری اور یہ اعزاز اپنے نام کرلیا۔

Leave a Comment

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔