حج درخواست گزار کو سعودی حکومت کی منظورشدہ ویکسین لگوانا ہوگی

سعودی عرب کی وزارت صحت نے حج بیت اللہ اسلامی سال 1442ھ کیلئے نئے پروٹوکولز کی سفارشات پیش کردی ہیں۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی حکومت نے اس سال حجاج کرام کی تعداد 60 ہزار تک محدود رکھی ہے جبکہ عازمین حج کیلئے عمر کی حد 18 سے 60 سال مقرر کی گئی ہے۔

وزارت صحت نے بتایا کہ حج درخواست گزار اس بات کی یقین دہانی کرائے گا کہ وہ ہرقسم کی پیچیدہ بیماری سے پاک ہے، ڈائیلیسزیا گزشتہ 6 ماہ میں کسی بیماری کے باعث اسپتال میں داخل نہ ہونےکا سرٹیفکیٹ دینا ہوگا۔

وزارت صحت کا کہنا ہے کہ حج درخواست گزارکو کورونا ویکسین کی دونوں خوراکیں اور پی سی آر ٹیسٹ کروانا ہوگا، عازمین کو اپنے ملک میں سعودی حکومت کی جانب سے منظورشدہ ویکسین لگوانا ہوگی، جبکہ کورونا ویکسین کی دوسری خوراک سعودی عرب پہنچنے سے 14 روز پہلے لگ چکی ہو۔

وزارت صحت کے مطابق عازمین کوسعودی عرب پہنچنے سے قبل اپنی حکومت کے منظورشدہ لیبارٹریوں سے پی سی آرٹیسٹ کروانا ہوگا، پی سی آر ٹیسٹ سعودی عرب پہنچنے کی تاریخ سے 72 گھنٹے سے زائد کا نہ ہو، اور پی سی آر ٹیسٹ کے بغیر کسی بھی مسافر کو جہاز پر چڑھنے نہیں دیا جائے گا۔

سعودی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ حج مقامات پہنچنے پر عازمین کے میڈیکل سرٹیفکیٹس، ویکسی نیشنز اور پی سی آرٹیسٹ کی جانچ پڑتال کی جائے گی جبکہ سعودی عرب میں مقررہ رہائش گاہ پہنچنے پر تین روز قرنطینہ کرنا ہوگا۔

حج درخواست گزار کو اپنے ملک میں سعودی حکومت کی جانب سے منظورشدہ ویکسین لگوانا ہوگی، کورونا ویکسین کی دوسری خوراک سعودی عرب پہنچنے سے 14 روز پہلے لگ چکی ہو، سعودی وزارت صحت نےحج بیت اللہ کیلئے نئے پروٹوکولز کی سفارشات پیش کردی ہیں.

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو