بیروت دھماکوں نے ساحلی پٹی کو کھنڈر بنا دیا

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ہونے والے دھماکوں نے ساحلی پٹی کو کھنڈر بنا دیا، شہر کی بندرگاہ تقریباً مکمل طور پر تباہ ہو گئی، سینکڑوں افراد بے گھر ہو گئے۔

دھماکوں کے نتیجے میں 135 سے زیادہ افراد جان سے گئے، 5 ہزار سے زیادہ زخمی ہوئے۔

بیروت میں دھماکوں کے بعد 2 ہفتے کے لیے ایمرجنسی نافذ کر دی گئی۔

دھماکوں کی ذمے داری کا تعین ہونے تک بندرگاہ انتظامیہ کے عہدے داروں کو گھروں پر نظر بند کرنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔

دھماکوں کے بعد سے درجنوں افراد تاحال لاپتہ ہیں، نقصان کا تخمینہ 15 ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔

لبنان کے صدر مشعل عون نے واقعے کی شفاف تحقیقات کی یقین دہانی کرائی ہے۔

بیروت دھماکے میں جاں بحق اور زخمیوں سے اظہار یک جہتی کے لیے پیرس کے ایفل ٹاور کی روشنیاں مقررہ وقت سے ایک گھنٹہ قبل بجھا دی گئیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو