اہلیہ کو مرتا چھوڑ کر عدالتی حکم پر سر جھکانے والے کو اشتہاری قرار دینا افسوسناک

صدر مسلم لیگ ن اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے سابق وزیراعظم نواز شریف کو اشتہاری قرار دینے پر اظہار افسوس کیا ہے۔

اپنے ایک بیان میں شہباز شریف کا کہنا تھا کہ اپنی اہلیہ کو مرتا چھوڑ کر عدالتی حکم پر سر جھکانے والے سے متعلق یہ حکم افسوس ناک ہے، نواز شریف نے وزیراعظم ہوتے ہوئے بھی ہمیشہ قانون، عدالت اور احتساب کا سامنا کیا۔

شہباز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان کو جوہری قوت بنانے والے سے متعلق یہ حکم سُن کر عوام کو دلی دکھ ہوا ہے، نوازشریف کی زندگی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کریں گے، وہ علاج مکمل ہوتے ہی وطن واپس آئیں گے۔

قائد حزب اختلاف کا کہنا ہے کہ نوازشریف نے سپریم کورٹ کو خط لکھ کر خود کو احتساب کے لیے پیش کیا تھا، اب بھی جیسے ہی نواز شریف کو ڈاکٹرز اجازت دیں گے، وہ پیش ہوجائیں گے۔

خیال رہے کہ راولپنڈی کی احتساب عدالت نے توشہ خانہ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو اشتہاری قرار دے دیا ہے، جب کہ سابق صدر آصف علی زرداری اور سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی پر فرد جرم عائد کر دی ہے۔

نواز شریف اور آصف زرداری پر تحائف میں ملی گاڑیاں ذاتی استعمال میں لینے اور یوسف رضا گیلانی پر گاڑیاں دینے کی سمری منظور کرنے کا الزام ہے۔

نواز شریف کو اشتہاری قرار دئیے جانے کے بعد ان کی جائیداد ضبط کرنے کی کارروائی شروع ہوگئی ہے اور پراپرٹی کی تفصیلات طلب کرلی گئی ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو