اگر پی ٹی آئی کے پاس عمران خان نہیں تو پی ٹی آئی کچھ نہیں

وفاقی وزیر برائے اطلاعات شبلی فراز کا کہنا ہے کہ اگر پی ٹی آئی کے پاس عمران خان نہیں تو پی ٹی آئی کچھ نہیں۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے امور، سیاسی صورتحال اور میڈیا حکمت عملی پر تبادلہ خیال کیا گیا جب کہ اس موقع پر عوام کو ریلیف دینے کے اقدامات اور فلاح عامہ کے منصوبوں پر بھی بات چیت کی گئی۔

اس دوران دونوں وزرا نے حکومتی کارکردگی کے حوالے سے اقدامات کو بھر پور طریقے سے اجاگر کرنے کا فیصلہ بھی کیا۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شبلی فراز نے کہا کہ کہ تحریک انصاف کی حکومت کا فوکس عوام کے حقیقی مسائل پر ہے اور میرٹ کی حکمرانی تحریک انصاف کی حکومت کا طرہ امتیاز ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی ٹیم وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں متحد ہے، اگر پی ٹی آئی کے پاس عمران خان نہیں تو پی ٹی آئی کچھ نہیں۔

اپوزیشن جماعتوں پر تنقید کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مائنس ون کی باتیں اپوزیشن کے ذہن کی اختراع ہیں، اب سیاسی یتیم پاکستان کی سیاست سے آؤٹ ہوچکے ہیں اور اپوزیشن کا بیانیہ پٹ چکا ہے اس لیے عوام کو پٹے ہوئے مہروں سے کوئی دلچسپی نہیں۔

بلاول بھٹو پر پر تنقید کرتے ہوئے وزیر اطلاعات نے کہا کہ بلاول نے ذاتی فائدے کیلئے ملکی مفاد قربان کردیا، بلاول بھٹو سندھ کو سنبھالیں، انہوں نے اپنی قومی جماعت کو علاقائی جماعت بنا دیا ہے۔

اے پی سی کی آڑ میں غیرفطری اتحاد کی داغ بیل ڈالی جا رہی ہے: عثمان بزدار

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ حکومت کی 2 برس کی کارکردگی ماضی کے 30 سالہ دور سے بہت بہتر ہے اور حکومتی اقدامات کو بہتر اندازمیں عوام کے سامنے لانے کیلئے میڈیا کا کردار کلیدی ہے۔

انہوں نے کہا کہ قومی وسائل کے غلط استعمال کی سابقہ روایت کو ختم کردیا ہے کیوں کہ کرپٹ عناصر کا بلاامتیاز احتساب پاکستان کی ترقی وخوشحالی کا ضامن ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کا گٹھ جوڑ صرف ذاتی مفادات کے تحفظ کیلئے ہے اور اے پی سی کی آڑ میں غیر فطری اتحاد کی داغ بیل ڈالی جا رہی ہے، یہ عناصر اپنی کرپشن کے داغ چھپانے کی ناکام کوشش کررہے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو