امارات میں رمضان کے دوران ملازمین کے اوقات کار کا اعلان، نجی شعبے سے تعلق رکھنے والوں کے وارے نیارے ہوگئے

امارات میں رمضان کے دوران نجی شعبے کے ملازمین کے اوقات کار کا اعلان کر دیا گیا۔

متحدہ عرب امارات کے وفاقی ادارہ برائے سرکاری افرادی قوت کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ رمضان المبارک کے دوران نجی شعبے کے ملازمین کی ڈیوٹی میں دو گھنٹے کی کمی کر دی گئی ہے۔ جبکہ تمام سرکاری دفاتر و محکموں میں پانچ گھنٹے کام ہو گا۔

سرکلر میں کہا گیا ہے کہ تمام وزارتوں اور وفاقی محکموں میں اوقات کار صبح 9 بجے سے لے کر دوپہر 2 بجے تک ہوں گے۔ مملکت میں بیشتر سرکاری ملازمین کو کورونا وائرس کی وبا کے باعث گھروں سے کام کرنے کی اجازت دی گئی ہے، جبکہ کچھ وفاقی ملازمین کو تنخواہ کے ساتھ رخصت پر بھیج دیا گیا ہے تاکہ اس موذی وائرس کے پھیلاؤ کا خدشہ کم سے کم ہو سکے۔

جبکہ سعودی وزارت افرادی قوت کی جانب سے بھی رمضان المبارک کے دوران سرکاری اور نجی شعبے کے ملازمین کے لیے ڈیوٹی اوقات کا اعلان کیا گیا ہے۔

وزارت کے جاری کردہ سرکلر کے مطابق رمضان المبارک کے دوران تمام وزارتوں، سرکاری محکموں اور اداروں میں ڈیوٹی کے اوقات 5 گھنٹے کے ہوں گے۔

سرکاری ملازمین صبح 10 بجے سے لے کر سہ پہر 3 بجے تک ڈیوٹی کریں گے جبکہ نجی شعبے کے ملازمین کا ڈیوٹی ٹائم چھ گھنٹے کا ہوگا۔ ہر ادارے کو سہولت حاصل ہو گی کہ وہ اپنے حساب سے ملازمین کی ڈیوٹی کے آغاز اور اختتام کا وقت مقرر کرے گا۔

اگر کوئی نجی ادارہ اپنے ملازمین کو اضافی رقم اداکیے بغیر ان سے چھ گھنٹوں سے زیادہ ڈیوٹی لے گا، تو اس کے خلاف وزارت محنت و سماجی بہبود میں شکایت درج کرائی جا سکتی ہے۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں کورونا متاثرین کی گنتی میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ مملکت میں کورونا کے زیادہ تر متاثرین تارکین وطن ہیں، جن کی شرح 73 فیصد بتائی جا رہے جبکہ کورونا کے مریضوں میں مقامی افراد کی شرح 27 فیصد ریکارڈ کی گئی ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو