اقوام متحدہ مقبوضہ کشمیر میں عید کی نماز پر پابندی کا نوٹس لے، پاکستان

پاکستان نے اقوام متحدہ سے مقبوضہ کشمیر میں عید کی نماز پر پابندی کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی نے ہفتہ وار میڈیا بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں عید الاضحی پر نماز کی پابندی کی مذمت کرتے ہیں، یہ عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے اور اقوام متحدہ اس بات کا نوٹس لے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارت بحیرہ ہند کو جوہری ہتھیاروں سے لیس کررہا ہے، بھارتی اقدامات اقلیتوں کیلئے خطرناک ہیں اور بی جے پی کی ہندو توا ایجنڈے کی حکومت خطے کے امن کیلئے خطرہ ہے۔

عائشہ فاروقی کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے رافیل طیاروں کی خریداری کی خبریں دیکھی ہیں، یہ طیارے جدید سسٹم سے لیس ہیں، بھارت جنوبی ایشیا میں ہتھیاروں کی دوڑ میں شامل ہے اور دنیا میں ہتھیاروں کا سب سے بڑا امپورٹر بن گیا ہے، پاکستان اس تمام تر صورتحال سے آگاہ ہے اور ہر قسم کی جارحیت سے نمٹنے کے لئے ہمہ وقت تیار ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی کا کہنا ہے کہ بھارت بحر ہند کو جوہری ہتھیاروں سے لیس کر رہا ہے۔

اسلام آباد میں ہفتہ وار پریس بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروقی کا کہنا تھا کہ کشمیر میں بھارت کے غیر قانونی قبضے کو آج 360دن ہو گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے ایل او سی پر بلا اشتعال فائرنگ جاری رکھی ہوئی ہے، پاکستان مقبوضہ کشمیر میں نماز عید کی پابندی کی مذمت کرتا ہے، اقوام متحدہ بھارتی اقدام کا نوٹس لے یہ عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت بحیرہ ہند کو جوہری ہتھیاروں سے لیس کر رہا ہے، بھارت جنوبی ایشیا میں ہتھیاروں کی دوڑ میں شامل ہے، اور بھارت دنیا میں ہتھیاروں کا سب سے بڑا امپورٹر بن گیا ہے لیکن پاکستان ہر قسم کی جارحیت سے نمٹنے کے لیے ہر وقت تیار ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے رافیل طیاروں کی خریداری کی خبریں دیکھی ہیں، رافیل طیارے جدید سسٹم سے لیس ہیں۔

عائشہ فاروقی نے کہا کہ ہمارے فرانس سمیت دیگر ممالک سے دوطرفہ تعلقات ہیں، رافیل طیاروں کی بھارت کو فروخت کا معاملہ تاحال فرانس سے نہیں اٹھایا۔

انہوں نے بتایا کہ بی جے پی کی ہندوتوا ایجنڈے کی حکومت خطے کے امن کے لیے خطرہ ہے، بھارتی حکومت کے اقدامات اقلیتوں کے لیے بھی خطرناک ہیں۔

بھارتی جاسوس کلبھوشن جادھو کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ترجمان دفتر خارجہ نے بتایا کہ کلبھوشن کو تیسری قونصلر رسائی پر بھارت کا تاحال جواب نہیں آیا۔

افغانستان امن عمل کے لیے امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کی پاکستان آمد کے حوالے سے بات کرتے ہوئے عائشہ فاروقی کا کہنا تھا کہ زلمے خلیل زاد کی آمد کے حوالے سے ابھی مصدقہ تاریخ کا علم نہیں ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان افغان طالبان کے سیز فائر اعلان کا خیرمقدم کرتا ہے، دوحہ میں طالبان کے ساتھ مذاکرات ہورہے ہیں، قیدیوں کے تبادلے سمیت دونوں اطراف کو اپنے وعدوں کی پاسداری کرنی چاہیے۔

عائشہ فاروقی نے کہا کہ افغان طالبان کے سیز فائر اعلان کا خیرمقدم کرتے ہیں، افغانستان میں دونوں اطراف کو اپنے وعدوں کی پاسداری کرنی چاہیے۔

بھارت جاسوس کلبھوشن یادیو سے متعلق سوال کے جواب میں عائشہ فاروقی نے کہا کہ کلبھوشن کو تیسری قونصلر رسائی کی پیش کش پر بھارت کا تاحال جواب نہیں آیا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

مینو